Sexual Weakness مردانہ کمزوری

مردانہ کمزوری ( ضعف باہ)نامردی Mardana Kamzori

 

جماع کی صلاحیت میں کمی یا نا کامی کو نامردی کہتے ہیں ۔

قدرت نے نسل انسان کی بقاءکے لئے جنسی عمل کا ذریعہ پیدا کیا ہے

جس کی انجام دہی کے لئے ضروری ہے کہ وہ مخصوص انتشار کی صلاحیت رکھتا ہو جسے کمی انتشاری کا نام بھی دیا جاتا ہے۔

انتشار کے بغیر جنسی عمل کی انجام دہی ممکن نہیں اور اسے عرف عام میں مردانہ کمزوری کہا جاتاہے ۔

یہ عموما اعضائے رائیسہ کی خرابی منشیات کی زیادتی اوراعصابی کمزوری کی وجہ سے ہو سکتی ہے ۔ اکژ اوقات نامردی پیدائشی طور پر بھی ہوتی ہے ۔
پیدائشی طور پر اعضائے تنا سل کا کوئی حصہ نا مکمل رہ جاتا ہے اس لئے وہ بچہ مردی صلاحیتوں سے محروم ہوتا ہے جسم کے غدودی نظام خرابیوں کی وجہ سے بھی وجوہات ہو سکتی ہیں ۔ جسم میں کوئی خرابی نہ بھی ہو تو تب بھی نامرد ہو سکتا ہے اس قسم کی نامردی میں کئی کئی دنوں تک انتشار محسوس نہیں ہوتا ۔ دوسری قسم میں انتشار ہوتا ہے مگر قائم نہیں رہتا ۔ نا مردی ایسا مرض نہیں ہے جس کا علاج نہ ہو یہ قابل علا ج ہے ۔ طب یونانی کے اصولوں کے مطابق اگر علاج کیا جائے تو 100فیصدقابل علاج ہے ۔

 

Male impotence 

Impotence is deficiency or failure of sexual intercourse.

Nature has created the means of sexual intercourse for the survival of the human race

In order to perform this, it is necessary that it be capable of specific anarchy, which is also called reduction anarchy.

Sexual intercourse is not possible without anarchy and is commonly called male impotence.

This disorder of the limbs is usually caused by drug overdose and neurological impairment. Often impotence is also congenital.
Congenitally, any part of the body’s stem cells is left incomplete, so the child loses his or her ability to function. Even if there is no defect in the body, it can still be impotent. This type of impotence does not feel chaotic for many days. The second type is chaos but does not last. Impotence is not a disease that cannot be cured, it is treatable. According to the principles of Greek medicine, if treated, it is 100% curable.

اسباب نامردی

پیدائشی نامردی،اعصابی کمزوری، فوطوں کا غائب ہونا، کژت جلق، اغلام بازی،ذیابیطسں ،جگرومعدہ کی خرابی،بڑھاپا،مسلسل بے آرامی،آتشک،منشیات کا کژت استعمال،اعضائے رائسیہ کی خرابی، بیوی کی سرد مہری ، حد سے زیادہ نفرت یاپیار، پریشانی ،خوف ڈر
قلت مذی،قلبی مرض،نفسیاتی مسائل،کام کی زیادتی،عضوتناسل کے ذاتی نقص،خصیہ کا ورم،شوق مباشرت کا ختم ہوجانا،ہائی کولیسٹرول،دماغ کا ٹیومر، کثرت مباشرت،موٹاپا،ہائی بلڈ پریشر،مباشرت کے وقت تنہائی کی کمی، وٹامن کی  کمی،دماغی امراض وغیرہ ۔

 

 


علامات

مباشرت کے وقت عضوتناسل میں تناؤ پیدا نہ ہونا
ذہن پریشانیوں میں گھومتا رہتا ہے
دل کی دھڑکن تیز ہو جاتی ہیں
ذہنی طور سے پریشان دکھائی دینے لگتا ہے۔

علاج

اسگند 50گرام

ستاور 50گرام

کونچ 50گرام 

موچرس 50گرام 

موصلی سفید 50گرام 

تمام چیزیں لے کر پیس لیں 1 چمچ صبح و شام دودھ کے ساتھ استعمال کریں ۔

 


 اگر کمزوری حرارت کی زیادتی کی وجہ سے ہو تو 

 روغن صندل خالص تین سے چار ڈراپس روزانہ سات دن تک 


اگر کمزوری ذیادہ عمر کی وجہ سے ہو تو 

لبوب کبیر خاص اپنی بنی ہو  ایک چمچ صبح و شام اگر کمزوری گردوں کے ضعف سے ہو تو ساتھ جوارش زرعونی عنبری جواہر دار  اپنی بنا کر صبح و شام ایک چمچ

 


عقرقرا ،مغز جائفل،جلوتری،قرنفل،میکہ روٹ،جنسنگ،ہارنی گوٹ،جدوار،کچلہ،اسگند، ثعلب پنجہ 10+10گرام برابر پیس کر زعفران6گرام عنبر2 گرام کستوری 1 گرام ملا کر 0کیپسول بھر لیں ایک کیپسول روزانہ


اگر کمزوری کی وجہ قلت منی ہو تو 

موسلی سفید ، ثعلب مصری، ثعلب پنجہ اسگند، ستاور،ہموزن پیس کر صبح و شام


 

مردانہ کمزوری خون کے بہاؤ میں کمی کے سبب ہوتا ہے
اس وجہ سے خون کے بہاؤ کو صحت مند طرز زندگی کو اپنا کر نہ صرف دور کیا جا سکتا ہے۔ بلکہ اس کے خطرے کو بھی روکا جا سکتا ہے
ہمیشہ قدرتی اشیا جیسے گندم ، پھل اور سبزیوں کو اپنی غذا کا حصہ بنائیں
لال گوشت ، مصنوعی مٹھاس والی اشیا کے استعمال میں احتیاط کرنا چاہیے
تمباکو نوشی اور شراب نوشی سے پرہیز کرنا چاہیۓ۔

روزانہ ورزش کو معمول میں لائیں۔

زیتون کے تیل کی پورے جسم پر مالش کریں 2 سے 3 ہفتہ متواتر

زیادہ گرم اور مقوی اشیاہ سے پرہیز رکھیں اس سے جگر کی حرارت بڑھ جاتی ہے جس سے قوت باہ اور کمزور ہو جاتی ہے۔

Male impotence

Male impotence Mardana Kamzori

Nature has created the means of sexual intercourse for the survival of the human race

In order to perform this, it is necessary that it be capable of specific anarchy, which is also called reduction anarchy.

Sexual intercourse is not possible without anarchy and is commonly called male impotence.

Nowadays the most disturbing disease is male impotence. For the treatment of which people spend lakhs of rupees for various treatments

Male Weakness Originality, Impotence, Weakness These words have a wide range of meanings, ie all levels from minor weakness to impotence.

Reasons

Causes of impotence

 

Congenital impotence, nervous weakness, disappearance of fetuses, nausea, vomiting, diabetes, liver, gastrointestinal disorders, old age, persistent discomfort, syphilis, malnutrition, rheumatoid arthritis Love, anxiety, fear
Malnutrition, heart disease, psychological problems, overwork, personal defects of the penis, testicular edema, loss of intimacy, high cholesterol, brain tumors, frequent intimacy, obesity, high blood pressure, lack of loneliness during intimacy , Vitamin deficiency, mental illness, etc.

 

Symptoms:


No tension in the genitals during intercourse
The mind wanders in troubles
The heart beats faster
Seems to be mentally disturbed.

Treatment

Men's Diseases

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin

Male Infertility مردانہ بانجھ پن

حکماء قدیم وجدید نے مادہ تو لید کو حرارت عز یزی رطوبت عزیزی اور طبعی روح کا لطف مرکب کہا ہے ۔ یہ گا ڑھی سفیدی مائل رطوبت ہے جس میں ایک خاص بوہوتی ہے ۔ لہون ہک وہ پہلا سائنسدان تھا جس نے سب سے پہلے منی میں کرم منی کو دریافت کیا تھا ۔ 

یہی وہ کرم منی ہیں جو اولاد پیدا کرنے کی حثیت پیدا کر تے ہیں ۔ جن مردوں کی منی میں یہ کرم کمزور، کم ،یا سرے سے موجود ہی نہ ہو ں ان کے ہاں اولاد نہیں ہوتی ۔ ایسے حالات کو مردانہ بانجھ پن کہتے ہیں ۔

شادی کے ایک سال تک عورت کا حاملہ نہ ہونا بانجھ پن کہلاتا ہے اس کا سبب عورت یا مرد یا دونوں ہی ہو سکتے ہیں۔

بانجھ پن ایک علامت ہے مرض نہیں بلکہ یہ مرض یا کئی امراض کی طرف اشارہ کرتا ہے۔

جن کی بنیاد پر یہ علامت پیدا ہوتی ہے۔عورت اور مرد میں اولاد پیدا کرنے والے نظام کو تولیدی نظام کہا جاتاہے۔

زنانہ اور مردانہ نظام تولید میں نقض بانجھ پن کا سبب بنتاہے۔

حمل قرار پانے کے لیے مرد کے مادہ منویہ میں سپرم کا ہونا ضروری ہے جبکہ عورت میں بیضہ کا پیدا ہونا ضروری ہے

مرد اور عورت کا انزال بیک وقت ضروری نہیں عورت اگر فارغ نہ بھی ہو تب بھی حمل قرار پا جاتا ہے۔

حمل کے لیے مرد کے ما دہ تولید کا عورت کے رحم میں داخل ہونا ضروری ہے۔سپرم انڈے کو  چوبیس گھنٹے سے ایک ہفتے تک  کسی بھی وقت کر سکتا ہے

معائنہ جوہر حیات (Semen Analysis)

سیمن سپرم رپورٹ کوآسانی سے سمجھا جاسکتا ہے

میڈیکل لیبارٹری میں مادہ منویہ کی

جانچ  پڑتال کے طریقے میں

مادہ منویہ میں پائے جانے والے نقائص اور حمل نہ ہونے کی وجوہات اور جراثیم کی صورتحال کا جائزہ لیا جاتا ہے

مادہ منویہ کا سیمپل دینے سے پہلے اس بات کا خیال رکھنا ضروری ہے کے احتلام یا ہمبستری سے کم ازکم پانچ سے سات دن کا وقفہ ہونا ضروری ہے

تاکہ اس کا مطلوبہ والیم پورا ہوجائے ۔

لیبارٹری میں سیمپل دینے کے بعد اس کو C ڈگری سینٹی گریڈ  کے درجہ حرارت میں 30 منٹ تک محفوظ رکھا جاتا ہے 37

Gross Examination

لیبارٹری میں سیمپل دینے کے بعد سیمن

  کے درجہ C 37  ڈگری سینٹی گریڈ

 حرارت میں 30 منٹ تک محفوظ رکھا جاتا ہے

مقدار /Volume 

سب سے پہلے سیمن کے والیم یعنی حجم کو دیکھا جائے گا یعنی کے ایک صحت مند آدمی کے مادہ منویہ کا والیم  (5 ) ملی لیٹر نارمل مقدار ہوتا ہے

 رنگت /Colour

رنگت کے اعتبار سے مادہ منویہ کریمی وائٹ رنگ کا ہونا چاہیے

ماہیت/Consistency

ماہیت کے اعتبار سے پتلا نہیں ہونا چاہیے بلکہ گاڑا ہونا چاہیے مگر بہت زیادہ گاڑھا بھی نہیں

اس کے بعد دوسرا حصہ Microscopic Examination

Total Sperm Count

ان کی نارمل مقدار ایک صحت مند آدمی کے مادہ منویہ کے اندر

ہوتی ہے (150-60Million /ML)

اس کے بعد ٹوٹل سپرم  کاؤنٹ میں سے اس کے اندر زندہ’ نیم مردہ’  اور مردہ سپرم دیکھے جاتے ہیں

 زندہ سپرم /Active 

ان کی نارمل مقدار 40 فیصد سمجھی جاتی ہے اس سے کم مقدار مرض کی علامت ہے

نیم مردہ سپرم / Sluggish

ان کو نیم مردہ اس لئے کہا جاتا ہے کیوں کہ یہ زندہ ہیں مگر اپنی جگہ سے حرکت نہیں کرتے وہی اپنی جگہ پر اپنے ہاتھ پاؤں مارتے رہتے ہیں

(اپنا سر یا دم ہلاتے رہتے ہیں )

مردہ سپرم / Dead Sperm

 کچھ سپرم بالکل حرکت کرنے کے قابل نہیں ہوتے ان کو مردہ کہا جاتا ہے

منی میں پس /Pus Cells

 مادہ منویہ میں خون کے سفید ذرات کا آنا انفیکشن کہلاتا ہے

اور ان سفید ذرات کو پس سیلز کہتے ہیں ۔  پس سیل کا زیادہ مقدار میں آنا زندہ سپرمز  کی صحت پہ بہت ناگزیر اثر ڈالتے ہیں

ان کی نارمل مقدار 1 سے 2 سیل ہوتی ہے

زیادہ تعداد میں ہونا بہت نقصان  دہ ثابت ہوتا ہے ۔

خون کے سرخ ذرات/ RBCs

مادہ منویہ میں خون کے سرخ ذرات کا موجود ہونا بھی کافی بڑھی انفیکشن کا سبب ہوتا ہے ۔

عام روٹین میں اس کی نارمل مقدار زیرو (00)  ہوتی ہے

اسباب

اسباب مردانہ بانجھ پن


پیدائشی بانجھ پن،نامردی،سرعت انزال،سوزاک،کن پیڑے آتشک،خون کی نالیوں میں بندش،خون کی مسلسل کمی ،فوطوں میں پانی،گردوں میں سوزش،کثرت جماع،اغلام بازی،مشت زنی،احتلام کی کثرت،جریا ن منی کی کثرت،یرقان،غدہ قدامیہ اور اوعدیہ منی کے امرا ض،ٹائیفائیڈ بخار، گلٹیاں ،غدود،بار بار ایکسرے دوران ماہواری جماع،خواب آور ادویات کا استعمال،اینٹی باءو یٹیک کا استعمال، وقتی امساک کی ایلو پیتھک ہومیوپیتھک ہائی پو ٹینسی ادویات کا استعمال، لنکو مائی سن،سٹیرائیڈ ادویات، فائی سک،ویبرامائی سن،یرگنال انجکشن ٹسٹو ویران پروفینی منشیات کا استعمال،شنگرف سنکھیا اورسیسہ کا استعمال شدید صدمات سے دوچار رہنا،مالی پریشانی جس میں متوازن غذا کا معاملہ میسر نہ آنا۔ نفسیاتی امراض۔مرد کے جنسی امراض سپرم کی کمی یا سپرم کی عدم موجودگی۔خصیوں پر چوٹ آنا,مرد کا صحبت کے قابل نہ رہنا۔
,پس سلز,باڈی بلڈنگ کے لیے ادویات کا استعمال
۔Lump نالی میں گرہ لگنا۔

علاج

:نسخہ سپرم کی کمی 

:سب سے پہلے سبب دریافت کریں پھر اس

کے مطابق علاج کریں

منی میں اگر پس سیل ہوں تو پہلے پس کا علاج کریں

اگر سبب کمزوری کا ہو تو نفس پر طلا کریں اور مقوی باہ ادویات استعمال کریں

 

Male Infertility

These are the semen that creates the status of having children. Men whose semen is weak, inferior, or not present at all do not have children. Such conditions are called male infertility.
A woman’s inability to conceive for one year after marriage is called infertility. It can be caused by a woman or a man or both.
Infertility is a symptom not a disease but it refers to a disease or many diseases.
On the basis of which this symbol is formed. The system that produces children in a woman and a man is called reproductive system.
Violations of the female and male reproductive system cause infertility.
In order for a pregnancy to take place, a man’s sperm must contain sperm, while a woman must produce an egg.
Ejaculation of a man and a woman is not necessary at the same time. A woman is considered pregnant even if she is not free.
For pregnancy, the male reproductive system must enter the woman’s uterus. The sperm can lay an egg at any time from 24 hours to a week.

Symptoms

Causes of male infertility

Congenital infertility, impotence, premature ejaculation, gonorrhea, syphilis, blood vessel blockage, persistent anemia, water in the stools, inflammation of the kidneys, excessive intercourse, promiscuity, masturbation, excessive sleep, semen Frequency of jaundice, conjunctivitis and sepsis, typhoid fever, glands, glands, menstrual intercourse during repeated X-rays, use of sleeping pills, use of antibiotics, use of antibiotics, temporary aloe vera homeopathic hypertension Use of Lincoln MySun, Steroid Medications, FiSec, VibramySun, Ergonal Injection, Testosterone, Profin Drugs, Shangarf Archive and Lead Lead to Severe Trauma, Financial Trouble with Unavailability of a Balanced Diet.

Treatment

Men's Diseases

Share on facebook
Share on twitter
Share on linkedin